Urdu novel 2022

وہ سجی سنوری سیج پر بیٹھی تھی ۔۔۔اس نے گیری سانس لی اور پھولوں کی مہک اپنے اندر اتاری ۔۔۔۔ آج وہ اتنی حسین لگ رہی تھی کہ بہن کو بھی مات دے گئ تھی اس کی حوروں جیسی حسین بہن ۔۔۔۔ خوبصورتی کا امتزاج ۔۔حسن کی دیوی ۔۔۔گوہر و لال تھی وہ ۔۔۔جو کسی کسی کو ملتا ہے ۔۔۔ آج دونوں دلہن بنی تھی لیکن ۔۔۔آج ماہی نے خوبصورتی میں مینو کو مات دے دی تھی ۔۔ ۔ آج اس کا چہرا اس کے حسن کا گواہ تھا ۔۔۔۔ اس کی آنکھوں میں دیے جگمگا رہے تھے ۔۔۔۔اس کا دلہا بھی کم نہ تھا ۔۔۔مردانہ وجاحت سے بھرپور،،،ستواں ناک ،،بڑی بڑی گہری آنکھیں۔شائستہ لب و لہجہ۔۔۔گورا چٹا رنگ ۔۔۔۔
۔مینو اتنی خوبصورت تھی لیکن اس کا دولہا بس عام شکل و صورت کا تھا ۔۔۔سانولے رنگ والا ۔۔۔عام لب و لہجے والا ۔۔۔۔نا جانے مینو مان کیسے گئ ۔۔۔۔
ماہی ماضی میں کھونے لگی تھی ۔۔۔۔کہ دروازے کی کھٹاک سے ایک دم سیدھی ہو بیٹھی ۔۔۔دو مضبوط قدم چمکتے ہوئے جوتوں میں اس کے سامنے آرکے ۔۔۔اس کی ہمت ہی نہ بنی کے نظر اٹھا کے مضبوط قدموں والے کے نرم تاثرات دیکھ لے ۔۔۔۔۔اس کے ۔۔۔۔دل کی دھڑکن تیز ہوئی ۔۔۔۔سانس مدھم ہوگئ ۔۔۔جسم میں عجیب سی سنسنی دوڑ گئ ۔ ۔۔نئے خواب آنکھوں میں اجلے اجلے سے لگ رہے تھے ۔۔ کوئی اس پل اس کا چہرا دیکھ لیتا تو ایک پل میں دل قدموں میں رکھ دیتا ۔۔۔جہاں حسن شرم و حیا نے مل کر قیامت ڈھا دی تھی ۔۔۔۔۔۔ابھی اس کے لبوں کو مسکراہٹ نے چھوا ہی تھا ۔۔۔کہ دولہے نے اس کے سر پر سجا بھاری دوپٹہ بے دردی سے کھینچ ڈالا ۔۔۔۔دوپٹے جو لاتعداد بالپنوں کی مدد سے اس کے سر سے چپکایا تھا ۔۔۔۔اس سے جڑے اس کے بال بھی اس کی چمڑی سے الگ ہوئے اور اب زمین پر پڑے تھے ۔۔۔ درد کی شدت سے اس کی چیخ نکل گئ ۔۔۔اس نے تکلیف سے سر پر ہاتھ رکھا تھا تو اس شخص نے اس کی کلائی مضبوطی سے تھام لی ۔۔۔۔کئ چوڑیاں ٹوٹ کر اس کی کلائی میں پیوست ہوگئ تھیں۔۔ اس کی چیخ آزاد ہوتی کہ دولہے نے اس کا منہ سختی سے دبوچ لیا ۔۔۔۔
۔۔۔” ششش ایک آواز بھی باہر نہ جائے ” وہ خونخوار آنکھیں نکالے بول رہا تھا ۔۔۔ ماہی کی آنکھون میں سجے خواب اب سیال بن اس کے گالوں پر بہہ رہے تھے ۔۔۔۔دولہے نے اب اس کا چہرا آزاد کیا تو وہ کپکپاتے ہوئے بولی ۔۔۔۔
۔۔۔آپ کیا کررہے ہیں ۔میں نے کیا کیا ہے میرا کیا قصور ہے ۔۔” وہ لرز رہی تھی خوف کی شدت سے اس کی ریڑھ کی ہڈی سنسنا اٹھی تھی ۔۔۔
اس کا ہاتھ اب بھی اس شخص کی

Leave a Reply

Your email address will not be published.